ساجدگوندل کون؟؟؟

2 weeks ago


جوائنٹ ڈائریکٹر ایس ای سی پی ساجد گوندل گزشتہ شام سے غائب ہیں

سکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان(ایس ای سی پی) کے جوائنٹ ڈائریکٹر ساجد گوندل جوگزشتہ شام سے غائب ہیں۔
ان کاتعلق سرگودھاکے چک نمبر26شمالی سے ہے۔انہوں نے اپنے کیریئرکاآغازاسلام آبادکے ایک مقامی اخبارسے بطورصحافی کیاتھا،اس کے بعدوہ جرمن کے ایک نشریاتی ادارے کے ساتھ وابستہ رہے، پھر ڈان اخبارکے ڈیسک پرکام کرتے رہے،،،محمدعلی جب چیئرمین ایس ای سی پی بنے توانہوں نے ان کاانتخاب بطورپبلک ریلیشن افسرکے کیاکیونکہ وہ پڑھے لکھے اورقابل تھے،،،،ذاتی دوستوں کے مطابق وہ سیاسی نظریات کے اعتبارسے تحریک انصاف سے ہم آہنگی رکھتے تھے۔
سابق وزیراعظم نوازشریف کے خلاف جب پانامہ کامعاملہ زیربحث آیااوراس میں اسحٰق ڈاراوران کے اہلخانہ کی کمپنیوں کی معلومات کے حصول کے لئے جب سابق چیئرمین ایس ای سی پی ظفر حجازی بھی زیر عتاب آئے توبعض ذرائع کے مطابق ساجدگوندل کوبھی وعدہ معاف گواہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی مگر انہوں نے انکارکردیا۔انہوں نے کہاتھاکہ وہ ایک پیشہ ورافسرہیں اورکسی سیاسی مہم جوئی کاحصہ نہیں بن سکتے ۔۔۔۔۔۔۔۔
صحافت سے منسلک رہنے کی وجہ سے ان کے کئی صحافیوں سے تعلقات ہیں۔وہ معلومات جوقانون اورقاعدے کے مطابق دی جاسکتی ہیں انہو ں نے بلاجہجک فراہم کیںمگرانہوں نے کبھی کسی صحافی کوحساس نوعیت کی معلومات فراہم نہیں کیں۔
اس وقت ساجدگوندل اہلخانہ کے ساتھ شہزادٹاﺅن میں رہائش پذیرہیں۔۔۔۔۔۔۔ان کے اہلخانہ کے مطابق ایک شخص خاتون کے ہمراہ اسن کے گھرآئے اوران کے بارے میں معلومات حاصل کیں جس پران کے بچے نے فارم ہاﺅس پران کے موجودہونے کے بارے میں بتائے۔
ساجدگوندل جمعرات کی شب انڈے اورڈبل روٹی لینے کے لئے نکلے تھے مگرگھرواپس نہ آئے۔ان کے اہلخانہ نے تھانہ شہزادٹاﺅن میںدرخواست جمع کرادی ہے۔۔۔ان کی بازیابی کے لئے ہائی کورٹ میں بھی رٹ دائرکی جارہی ہے۔
واضح رہے سکیورٹی ایکسچینج کمیشن آف پاکستان(ایس ای سی پی) کے جوائنٹ ڈائریکٹر ساجد گوندل کو گزشتہ شام اغواءکرلیاگیا ۔ کہاجارہاہے کہ انہیں ہائی پروفائل شخصیت کے کاروبار سے متعلق کسی صحافی سے رابطے کے شبہے پرنامعلوم افراد نے اغوا کیا۔ان کی گاڑی نیشنل ایگریکلچرل ریسرچ سینٹر(این اے آرسی)کے قریب سے ملی ہے لیکن تاحال ان کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہوا۔ان کی گمشدگی کے بعدٹویٹرپر #BringBackSajidGondalٹاپ ٹرینڈکررہاہے۔پولیس کے مطابق واقعہ کی تفتیش کی جارہی ہے۔

شیئر کریں