اردو | NEWS

پنجاب حکومت کوبلدیاتی ادارےبحال کرنےکیلئے28جولائی تک مہلت

لاہور(نیوزڈیسک)لاہورہائی کورٹ نے پنجاب حکومت کو صوبے بھر کے بلدیاتی ادارے بحال کرنے کے لئے 28 جولائی تک مہلت دے دی۔سپریم کورٹ کے حکم کے باوجودبلدیاتی ادارے بحال نہ ہونے کے کیس کی لاہور ہائیکورٹ میں سابق میئرلاہور اور دیگر کی درخواستوں پر سماعت ہوئی۔
چیف سیکرٹری پنجاب اور سیکرٹری بلدیات عدالت میں پیش ہوئے۔جسٹس عائشہ اے ملک نے درخواستوں پر سماعت کی۔ جسٹس عائشہ اے ملک نےچیف سیکرٹری سے استفسارکیاکہ بلدیاتی ادارے کیوں بحال نہیں کئے؟چیف سیکرٹری نے جواب دیا کہ بلدیاتی اداروں کی بحالی سے متعلق کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔
جسٹس عائشہ اے ملک نے مزید استفسار کیا کہ اس کمیٹی نے کیا کرنا ہے اوریہ کب کام شروع کرے گی۔ چیف سیکرٹری نے جواب دیایہ کمیٹی عید کے بعد کام شروع کرے گی۔چیف سیکرٹری کوجسٹس عائشہ اے ملک نے کہا سپریم کورٹ کاحکم ہے اور اس پر پنجاب حکومت کو عمل کرنا ہوگا۔پنجاب حکومت نیاجواب جمع کروائے۔
لاہور ہائی کورٹ میں دائر درخواستوں میں حکومت پنجاب اورسیکرٹری بلدیات سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست گزار نےموقف اختیار کیا ہے کہ سپریم کورٹ پاکستان نے بلدیاتی اداروں کو بحال کرنے کا حکم دیا لیکن سپریم کورٹ کے تحریری فیصلے کے باوجود تاحال بلدیاتی اداروں کو بحال نہیں کیا گیا۔
حکومت جان بوجھ کر عدالتی حکم پر عمل درآمد نہیں کررہی ہے۔ بلدیاتی اداروں کی عدم بحالی کے باعث عوامی مسائل حل نہیں ہو پارہے۔سپریم کورٹ کے فیصلے پرعمل درآمد نہ کرنا توہین عدالت کے زمرے میں آتاہے۔عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ حکومت کے خلاف عدالت توہین عدالت کی کارروائی کا حکم دے۔

ویڈیوز

پیرس میں سجادیسی فیشن شو
ننھے مہمانوں سے رونقیں بحال
سرکاری ملازمین بھی احتجاج کیلئے نکل پڑے
میجرکی فروٹ چاٹ ہوگئی کامیاب