پاکستان سےجی ایس پی پلس رعایت واپس لینے کی قرار داد

1 week ago


پاکستان کااظہارمایوسی،قرار داد یورپی پارلیمنٹ میں سویڈن سے تعلق رکھنے والے رکن نے پیش کی

پاکستان نے یورپی پارلیمنٹ کی طرف سے پاکستان کے توہین رسالت کے قوانین کے خلاف منظور ہونے والی قرار داد پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ یورپی پارلیمنٹ توہین رسالت کے قوانین اور پاکستان بلکہ مسلم دنیا میں ان سے منسلک مذہبی حساسیت کو نہیں سمجھتی۔

دفتر خارجہ کے ترجمان کے مطابق یورپی پارلیمنٹ میں پاکستان کے عدالتی نظام اور ملکی قوانین پر تبصرہ قابل افسوس ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں متحرک سول سوسائٹی، آزاد میڈیا اور آزاد عدلیہ موجود ہے جو اقلیتوں کے حقوق کے بلا امتیاز تحفظ کے لئے پر عزم ہیں۔

یہ قرار داد سویڈن سے تعلق رکھنے والے رکن یورپی پارلیمنٹ چارلی وائیمرز نے پیش کی تھی اور اس میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ پاکستان کو دی گئی جی ایس پی پلس رعایت واپس لی جائے۔

اس قرار داد میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اپنے ملک کا توہین رسالت کا قانون ساری دنیا میں لاگو کرنے کے خواہش مند ہیں۔

اس سلسلے میں انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کے قوم سے 19 اپریل کو کئے گئے خطاب کا حوالہ دیا جس میں انہوں نے مسلمان اکثریتی ممالک سے کہا تھا جو ملک توہین رسالت کا مرتکب ہوتا ہے اس کا سارے مسلمان ملک مل کر تجارتی بائیکاٹ کریں۔

چالی وائیمرز نے پاکستان میں توہین رسالت کے قانون کی وجہ سے ہونے والے قتل کے واقعات اور اسی الزام میں جیلوں میں قید لوگوں کے حوالے دیئے۔چالی وائیمرز کی طرف سے جمعرات کے روز پیش کی جانے والی قرار داد پر عمل درآمد لازمی نہیں۔

شیئر کریں



یہ بھی پڑھیے


پاکستان سےجی ایس پی پلس رعایت واپس لینے کی قرار داد